463

آل بونیر فارماسسٹ ایسوسی ایشن کا ورلڈ فارماسسٹ ڈے پرڈگر پل سے پریس کلب تک آگاہی واک

بونیر۔ شوکت بونیری: آل بونیر فارماسسٹ ایسوسی ایشن کا ورلڈ فارماسسٹ ڈے پرڈگر پل سے پریس کلب تک آگاہی واک کے بعد پریس کانفرنس میں حکومت سے سرکاری و نجی ہسپتالوں اور فارمیسی مراکز میں تعنیاتی کا مطالبہ ،کوالیفائیڈ فارماسسٹ یونین کے عہدیداران صدر عبداللطیف ،جنرل سیکریٹری مشتاق احمد ،عبد الودود،سینئر وائس صدرمحمد اسماعیل ،وائیس نورصمد خان،پریس سیکریٹری نوید احمد اور فنانس سیکریٹری سمیع الحق نے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ واک میں حصہ لیا ۔انہوں نے بینرز اٹھارکھے تھے جس پر فارماسسٹ آپکے صحت کا محافظ ہیں کا نعرہ درج تھا۔

پریس کانفرنس کے دوران عہدیداروں نے انکشاف کیا کہ بونیرکے ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں بھی فارماسسٹ نہیں ہیں اور کروڑوں کی ادویات فارماسسٹ کے بغیر مریضوں کو دئے جاتے ہیں جبکہ ضلع بھر کے دیگر سرکاری و نجی ہسپتالوں میں فارماسسٹ کا سرے سے کوئی تصور نہیں ہیں۔انہوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ بدقسمتی سے پچاس فیصد بیماریاں غلط ادویات کی وجہ سے ہیں بقول انکے فارماسسٹ بین الااقوامی قوانین کے مطابق پچھیس بیڈ ہسپتال میں ایک کوالیفائید فارماسسٹ کا ہونا ضروری ہے جبکہ ڈرگ ایکٹ کے مطابق ہر فارمیسی میں فارماسسٹ کا ہونا بھی ضروری قرار دیا گیا ہے اور سپریم کورٹ کے فیصلہ میں بھی واضح ہدایات دی گئی ہیں لیکن بدقسمتی سے غیر فارماسسٹ کے ہاتھوں مریضوں کی ہیلتھ اور ویلتھ کو علاج کے لیے ادویات کے نام پر نقصان پہنچایا جارہاہے۔لیکن حکومت نے چھپ کا روزہ رکھا ہوا ہے اور کوالیفائیڈ فارماسسٹ بے روزگار پھر کر ذہنی اور جسمانی مسائل کا شکار ہورہے ہیں۔

انھوں نے اعداد و شمار پیش کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ بونیر میں کل دو سو پچاس کوالیفائیڈ فارماسسٹ رجسٹرڈ ہیں جن میں صرف پچاسی بونیر میں موجود ہیں اور دیگر مزدوری کی عرض سے دوسرے ممالک اور دوسرے شہروں میں چلے گئے ہیں۔جبکہ بونیر کے صرف سرکاری ہسپتالوں میں اسی کوالیفائیڈ فارماسسٹ کو نوکریاں دینے کی گنجائیش موجود ہیں۔انھوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ دوسرے صوبوں کی طرح خیبر پختونخوا کے ہر ہسپتال میں کوالیفائیڈ فارماسسٹ کی تقرری کی جائے اور ہر فارمیسی میں بھی انکی تقرری کے احکامات جاری کیے جائیں۔جس سے اگر ایک طرف بے روزگار نوجوانوں کو روز گار ملے گی وہاں خاندانوں کی کفالت کے ساتھ مریضوں کو مرض کے خاتمہ کے لیے درست ادویات ملنے سے صحت مند معاشرہ تشکیل پاکر ملکی معشیت پر اچھے اثرات مرتب ہونگے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں