593

اگر پاک بھارت جنگ چڑھ گئی تو زیادہ نقصان کس کا ہوگا؟

پاکستان اور بھارت کے تعلقات پھر سے خراب.
پاکستان ایک ایٹمی طاقت اور پیشہ ورانہ فوج رکھنے والا پرامن ملک ہے.
ایک تجربہ کار اور بہادر فوجی ملک کو بھارتی آرمی چیف بپن روات نے للکارنے کی کوشش کی ہے. جو حطہ کے لیے کسی بھی صورت میں اچھا نہی ہے. دونوں ملکوں کے عوام غربت کے لکیر سے نیچے زندگی گزار رہی ہے. ہم لوگ جنگ کے متخمل نہی ہیں لیکن اگر جنگ مسلط کردی گئی تو بھات میں گھاس اُگے گی اور نہ چڑیا چہچہائینگے (شیخ رشید). ٹھیک فرمایا ہے.
دونوں پڑوسی ملکوں کو دوست رہنا چاہئیے. دشمنی کے چکر میں اپنے جی ڈی پی کا بہت بڑا حصہ اسلحہ خریدنے پر اڑادیا جاتا ہے.
22 ستمبر 2018 کو بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت نے غیر ذمہ دارانہ بیان بازی شروع کردی ہے، انہوں نے پاکستان مخالف بیان دیتے ہوئے کہا کہ “وقت آ گیا ہے کہ پاکستانی فوج سے بدلہ لیا جائے، مخالف کوبھی درد محسوس کروانا چاہتے ہیں”
میرے خیال سے دونوں ملکوں کو دوست رہنا چاہئے ورنہ دشمنی کی صورت میں کچھ نہی بچےگا. پاکستانی قوم ہمیشہ اپنی فوج کے ساتھ ہوتی ہے. غلط فہمی کی کوئی گنجائش نہی.
تحریر و تجزیہ
بخ روم شاہ بونیری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں