362

کیا تنقید کرنا کسی کو آئینہ دیکھانا جرم ہوتا ہے؟

کیا تنقید کرنا یا کسی کو آئینہ دیکھانا جرم ہوتا ہے? اگر جرم ہو تو معاشرے میں انصاف اور قانون کی کمی ہوتی ہے. اگر ٹھیک ہے تو پھر لوگ مثبت انداز میں تنقید کیوں نہیں کرتے. ٹھیک ہے سر, یس سر, ٹک دہ خان جی, ملک صاحب ٹھیک کہتے ہیں والے الفاظ ہر وقت کیوں کانوں میں گونجتے ہیں. اس کے پیچے ایک لمبی کہانی ہے. جب کوئی انسان کچھ ٹکوں اور پیسوں کے حاطر فروحت ہوجائے تو اس محفل میں .ہمیشہ اس قسم کی صدائیں سنائی دیتی ہیں. قوم کے مستقبل کے لیے قوانین بنانے والوں کے چناؤ کا وقت آگیا ہے. ۳ماچ ۲۰۱۸ کو ۵۲ سینیڑز کے انتخاب کا دن ہے. انکو ووٹ دینے والے عام لوگ نہیں ہوتے ہیں بلکہ صوبائی اسمبلی کے معزز نامزد ارکان ہوتے ہیں. یہ جسکو بھی ووٹ دینگے تو وہی ہمارا مستقبل ہوگا. اکثر ان دنوں میں لوگ ہارس ٹریڈنگ والا جملہ استعمال کرتے ہیں. جسکا مجھے آج تک سمجھ نہی آئی کہ انسانوں کے انتخاب میں گھوڑوں کی خرید و فروخت کیا کام ہوتا ہے اور کیونکر ہوتا ہے. اللہ ہی جانتا ہوگا اور وہ لوگ جانتے ہونگے جو یہ کاروبار کرتے ہونگے. میں نے تو آج تک یہی سنا ہے کہ جسکو صوبائی اور قومی اسمبلی کے لیے منتخب کیا جاتا ہے وہ بڑے ایماندار اور مخب وطن ہوتے ہے. کیونکہ انتخابی مہم میں انکے پوسڑز پر لکھا ہوتا ہے. کہ اعلی تعلیم یافتہ, بے داغ ماضی کا مالک, ہونہار, مُلک و قوم کا خادم اور مخب وطن وغیرہ وغیرہ. یہ سارے کام تو انسانوں کے ہوتے ہیں یہاں گھوڑے کہاں اور ہارس ٹریڈنگ کہاں. یہ مثبت تنقید و آئینہ دیکھانا ہے یا …………… تحریر صوبیدار میجر (ر) بخت روم شاہ تمغہ خدمت عسکری سماجی و سیاسی کارکن پی ٹی آئی بونیر خیبر پختونخواہ.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں