غیر ملکی ایجنسیز سے ہوشیار رہیں ! جمعیت علماء اسلام اور حکومت کو درمیان کشیدگی میں اضافہ

غیر ملکی ایجنسیز سے ہوشیار رہیں !

جمعیت علماء اسلام اور حکومت کو درمیان کشیدگی میں اضافہ کرنے کے لیے بیرونی ایجنسیز متحرک ہوگئی ہے , آج ہی جمعیت علماء اسلام ضلع باجوڑ , کے صوبائی امیدوار مولانا مفتی سلطان محمد کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ صبح کے نماز کے لیے مسجد جارہے تھے.

ان کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ آج تک کسی کو بھی اس سے ضرر نہیں پہنچا ہے , بلکہ انتہائی عاجز شخصیت تھے…

اس بناء پر حکومت اور اپوزیشن خصوصا جے یو آئی کے درمیان کشیدگی میں اضافہ کے لیے موصوف کو نشانہ بنایا گیا …

میرے معلومات کے مطابق موصوف اب تک زخمی ہیں, ان کو ڈسٹرکٹ ہپستال منتقل کیا گیا تاہم ان کی حالت تشویش ناک رہی جس کے بعد انہیں پاک آرمی کے جوانوں نے بذریعہ ہیلی کاپٹر پشاور منتقل کردیا.

اللہ تعالی اس ملک اور اس کے باشندوں کی حفاظت فرمائے …

میں یقین کے ساتھ کہتا ہوں, کہ این ڈی ایس کے اہل کار پشاور اور قبائلی علاقہ جات میں متحرک ہو گئے ہیں, تاکہ عوام کو نشانہ بناکر اداروں پر اس کا الزام لگایا جائے اور جے یو آئی اور پی ٹی ایم کو مزید حکومت اور اداروں کے خلاف متحرک کیا جائے …

میں اپنے تمام ساتھیوں سے اپیل کروں گا ایسے کسی بھی واقعے پر اپوزیشن ہی کا کیوں نہ ہوں اس کو اچھا اقدام مت گردانیے بلکہ اس کو ملک دشمن عناصر کا اس کشیدگی میں اضافہ کرنے کا گیم سمجھے اور اس پر مذمت کریں…

پی ٹی ایم اس واقعے کو کیش کرنا چاہتی ہے اس سے ہوشیار رہیں.

غیر ملکی ایجنسیز سے ہوشیار رہیں !

اپنا تبصرہ بھیجیں