پولیوں پاکستان 281

کیا پولیو ویکسین میں دیگر ادویات کی طرح ردوبدل تو نہیں کیا گیا ہے؟؟

پولیو ویکسین صرف،پاکستان میں نہیں بلکہ اسرائیل جیسے ترقی یافتہ ملک میں بھی پلاے جاتے ہیں ۔مقبوضہ فلسطین یعنی اسرائیل کے ایک ڈاکٹر نے بتایا کہ جس گاڑی سے ہم عربوں کے بچوں کو پلایاجاتاہے اسی سے یہودی بچوں کو بھی قطرءے پلاے جاتے ہیں۔ ایک گاڑی ۔ایک ٹیم اور ایک ہی دوای۔۔۔۔فرق صرف اتنا ہے کہ اسرائیل میں بندوق کے ساے تلے نہیں پلاے جاتے۔

اسرائیل کا متشدد یہودی مذہبی فرقہ حریدیم اور مسلمانوں کا سلفی گروپ پولیو ویکسین نہیں پلاتے ۔۔حریدیم خاموش رہ کر پلانے سے انکاری جبکہ سلفی اس کی مخالفت کرتے ہیں ۔دونوں کو مگر ازادی ہے۔




اسرائیل میں کیی ایسی بستیاں ہیں جہاں پولیوں ویکسین کے خلاف مہم چلتی ہے۔۔ اس پر مگر کوی قدغن نہیں۔
اس کے برعکس پاکستان میں میڈیا نے پولیوویکسین کے دو متضاد پہلوں بتاکر عوام کو انتھای مبالغہ امیز معلومات دیکر شدید ذہنی اذیت اور نفسیاتی کوفت وگمراہی میں مبتلا کررکھا ہے۔۔
جس کے نتیجہ میں عوام کا ایک طبقہ اسے زہر ہلاہل جبکہ دوسرا طبقہ تاریاق سمجھتا ہے۔ یہ معاشرے کے دو مختلف کنارے ہیں ۔۔۔
حکام کی طرح علماء بھی اس ویکسین کے حوالے سے متفرق ہیں۔ حکومت اس ویکسین پر غیرمعمولی سختی کرتی ہے لیکن اس کے پیچھے کارفرما مقاصد سامنے لانے سے گریز بھی کرتی ہے۔۔ علماء کا ایک بڑا طبقہ اسے اچھا نہیں سمجھتا لیکن اس کی کوی تسلی بخش وجہ سامنے نہیں لاسکے۔
حکام وعلماء کایہ سربمہر انداز عوامی پریشانی کا سبب بن رہاہے ۔۔۔




دوسری جانب بدقسمتی سے وقتا فوقتا پاکستان میں پولیوویکسین پلانے کے منفی اثرات اور ری ایکشن کے روح فرسا واقعات بھی رونما ہوتے رہتے ہیں ۔واقعہ اس وقت مزید افسوسناک شکل اختیار کرجاتاہے جب ایسے مواقع پر حکام یہ کہہ کر جان چھڑانے کی کوشش کریں کہ یہ تو عالمی ادارہ صحت سے منظور شدہ ہیں ۔حالانکہ حقیقت یہ ہے کہ عالمی ادارہ صحت نے کب منظوری دی تھی اسکے بعد کتنا وقت گزرگیا۔اس بابت کوی پوچھ سکتا ہے اور ناہی کچھ بتایاجاتاہے۔۔۔ حالانکہ یہ سوال اپنی جگہ پر ہے کہ کہیں ویکسین کی تاریخ گزر تونہیں گیی ؟؟؟
۔کہیں اس میں دیگر ادویات کی طرح ردوبدل تو نہیں کیا گیا ہے۔؟؟
کہیں پلانے والی ٹیموں میں بھارتی دھشت گرد گھس کر ملک میں ہنگامہ کھڑا کرنے کی سازش تو نہیں کررہے ہیں؟؟؟؟؟




۔۔بھارت اگر اسکول کے بچوں کو گولی سے نشانہ بناسکتا ہے تو سفاک این ڈی ایس اور را پولیوویکسین کا حربہ بھی استعمال کرسکتی ہیں ہے لہذا اعتدال اور ٹھنڈے دماغ سے اس معاملے کو دیکھنے اور حقایق تک رسائی کی ضرورت
ہے۔

پولیوں پاکستان

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں