پاکستانی میزائلوں کی تاریخ

کیا واقعی پاکستان کے تمام میزائلوں کے نام افغان فاتحین کے ناموں پر ہیں؟؟

پی ٹی ایم کا لبادہ اوڑھے افغانی اکثر اس کا طعنہ دیتے نظر آتے ہیں۔ آج سوچا اس کو چیک کر لیا جائے کہ پاکستان کے کتنے مزائلوں کے نام افغان فاتحین کے ناموں پر ہیں۔

ملاحظہ کیجیے۔

1 ۔ حتف میزائل ۔۔ حتف عربی زبان کا لفظ ہے جس کا مطلب ہلاکت یا ہلاک کرنے والا ہے۔

2 ۔ نصر ۔۔۔ یہ بھی عربی زبان کا لفظ ہے جس کا مطلب فتح کرنا یا بچانے والا۔




3۔ ابدالی ۔۔۔ درانی یا ابدالی پشتون قبیلہ ہے۔ یہ موجودہ افغانستان اور پاکستان دونوں میں پایا جاتا ہے۔ یہ اسی پشتون قبیلے کے احمد شاہ ابدالی کے نام پر ہے جو ملتان میں پیدا ہوئے تھے یعنی موجودہ پاکستان کے ابدالی یا درانی تھے۔

4۔ غزنوی ۔۔ یہ مشہور فاتح محمود غزنوی کے نام پر ہے۔ محمود غزنوی کا والد سبکتین ترک کمانڈر تھا یعنی افغان نہیں بلکہ ترک تھا۔

5۔ شاہین ۔۔۔ شاہین پرندے کے نام ہے جو حملہ کرنے اور پرواز کرنے میں بے مثل ہے۔

6۔ بابر ۔۔ مشہور فاتح ظہیرالدین بابر کے نام پر ہے جو مشہور ازبک فاتح تیمورلنگ کا پوتا تھا یعنی ازبک تھا۔




7۔ غوری ۔۔۔ یہ مشہور فاتح حکمران غیاث الدین غوری کے نام پر ہے۔ غوری نسلاً تاجک تھے اور ان کا تعلق ایران سے تھا۔ فارسی بولتے تھے اور خود کو شنسبانی کہتے تھے۔ تاریخ دانوں کا فیصلہ ہے کہ یہ ساسانی نام وشنسپ سے بگڑ کر عربی میں آل شنسب کہلایا اور فارسی میں شنسبانی۔

8۔ ابابیل ۔۔ یہ بھی پرندے کے نام پر ہے جس نے ہاتھیوں کے لشکر پر کنکریاں برسائی تھیں۔

9۔ ٹیپو ۔۔۔ یہ میزائیل ابھی تکمیل کے مراحل میں ہے۔ ٹیپو سلطان کے نام پر ہے جو میسور کے حکمران تھے اور انگریزوں کے خلاف بہادری سے لڑتے ہوئے جان دی تھی۔




10۔ رعد اور برق ۔۔۔ یہ دو چھوٹے مزائیل ہیں جو لیزر گائیڈڈ ہیں۔ ان کا مفہوم تقریباً ایک ہی ہے یعنی بادل کی گرج یا بجلی کی کڑک۔

اب بتائیے کتنے میزائل افغان فاتحین کے نام پر ہیں؟

یا افغان فاتحین سے مراد وہ تمام لوگ جنہوں نے افغانستان فتح کر رکھا تھا نسلاً چاہے وہ ترک یا ایرانی ہی کیوں نہ ہوں؟

تحریر شاہدخان

پاکستانی میزائلوں کی تاریخ

اپنا تبصرہ بھیجیں