213

افراد کو افرادی قوت بنائیں تحریر: عبدالجبار دریشک

Abdul Jabbar Khan Columns

چینی قوم کو دنیا میں محنتی قوم کا درجہ حاصل ہے جنہوں نے چند سالوں میں لگاتار محنت کر کے اپنے ملک کو امریکہ جیسے سپر پاور کے سامنے دیوار بنا کر کھڑا کر دیا

افراد کو افرادی قوت بنائیں تحریر: عبدالجبار دریشک

محنتی افراد یا افرادی قوت صرف چین کے پاس نہیں ہے بلکہ احباب جہاں انسان بستے ہوں گے وہاں افرادی قوت ہوگی دھرتی پر آنے والے انسان نے اپنی زندگی صفر سے شروع کی تھی آج انساں کہا پہنچ چکا اور کہا پہنچ جائے گا یہ سارا عمل خود انسانوں حیرانی میں مبتلا کر دیتا ہے

اب جہاں انسان نہیں ہوں گے وہ جگہ صدیوں پہلے جیسی تھی ویسی ہی رہے گی جب جب انسان اسکی طرف رخ کرے گا اس جگہ میں تبدیلی کی لہر ضرور پیدا ہو گی۔ میں یہاں سمندر کی مثال دیتا ہوں جب جب انسان سمندر میں گیا ہے تب تب وہاں تبدیلی پیدا ہوتی نہیں وہ سمندر ہمیشہ ایک ہی جیسا رہتا ہے۔




چین اور ہمارے پاس ایک چیز مشترکہ ہے وہ ہیں افراد ہمارے پاس افراد ہیں لیکن ان افراد کو افرادی قوت میں تبدیل نہیں کیا گیا۔

ہمارے پاس ہنر مند ہیں بھی تو انہیں موقع فراہم نہیں کیا گیا انہیں وہ پلیٹ فارم نہیں دیا گیا جہاں اس کے ہنر کی مناسب قیمت اسے مل سکے۔ ایسے بہت سے ممالک ہیں جو صرف اپنا کلچر دیکھا کر اور روایتی چیز بنا کر فروخت کرتے ہیں اور اچھا خاصہ زرمبادلہ کماتے ہی۔

آج بھی آپ شہروں سے دیہات کا رخ کریں تو آپ کو خواتین کے ہاتھوں کی بنی روایتی اشیاء ملیں گی جو دیکھنے کے لائق ہوتی ہیں لیکن ان اشیاء کی ویلیو ہی نہیں بنائی گئی ان کی مارکیٹنگ نہیں گئی اب گھر میں چیزیں تیار کرنے والی خواتین ان کی مارکیٹنگ خود تو نہیں کر سکتی ہیں

جیسے آپ نمائش یا آئیڈیاز نامی ایکسپو لگاتے ہیں جس میں دنیا بھر کے ممالک شرکت کرتے ہیں باہر سے لوگ آکر آپ کا بنا اسلحہ ،ٹینک ، جنگی طیارے خریدتے ہیں ایسے ہی ان روایتی اشیاء کی نمائش لگا کر ان ہنر مندوں کو پلیٹ فارم مہیا کیا جاسکتا ہے




ایکسپو بجائے اسلام آباد لاہور رکھنے مقامی سطح پر ہو تاکہ باہر سے آنے والے مندوبین ان اشیاء کو دیکھنے کے ساتھ مقامی کلچر کو بھی دیکھ سکیں اس کا فائدہ یہ ہوگا کہ لوکل دستکاریوں کا کام شروع ہوجائے گا کلچر کو ساتھ شامل کرنے سے سیاحوں کی آمد ہوگی ۔

چین کی طرح افراد کو افرادی قوت میں تبدیل کریں اور ایسے ترقی کی راہ پر چل پڑیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں