Top 10 army staff 495

دنیا کے دو تیز ترین دماغوں والے جرنیل تحریر: جان زادہ

دنیا میں پاکستان جرنیل تیز ترین دماغوں والے جانے جاتے ہیں جن میں 2 کے نام بتاتا ہوں

جنرل حمید گل (مرحوم)

امام المجاحدین کرنل امام (مرحوم)

Top 10 army staff

یہ رٹائرڈ ہونے کے بعد بھی دشمن کے لئے اتنے ہی خطر ناک رہے جتنے حاضر سروس تھے جو موجود ہیں وہ کتنے خطرناک ہوں گے

تو انڈیا یہ کیسے بھول گیا پراکسی وار ہم پہ مسلط کرے اور ہم خاموشی اختیار کر لے ممکن ہی نہیں امریکہ انڈیا افغانستان نے مشترکہ پراکسی وار کے لیے

منظور شیطان کو لانچ کیا پختون کارڈ استعمال کرنا چاہا لر و بر گیم کھلی پختونوں میں شازش رچنی چاہی مگر اللّٰہ تعالیٰ کا شکر ہے ہمارے لوگ سمجھدار نکلے اور سمجھ گئے اور یہ پراپیگنڈہ ناکام ہو گیا




پراکسی وار میں افغانستان کو جواب

اس کا جواب افغانستان کو بھی مل گیا
افغانستان میں آزادی چاہنے والی ایک نئ تحریک نے جنم لیا. “آزاد شمالی ترکستان”.
افغانستان میں اشرف غنی حکومت کے خلاف باغیانہ مظاہرے آج بھی جاری ہیں
صوبہ فاریاب میں مظاہرین پر فائرنگ کے نتیجے میں کئ ترکمن ازبک برادری کے لوگ جاں بحق و زخمی ہوئے. جسکے بعد مظاہرین نے باقاعدہ طور پر “ازاد شمالی ترکستان ریاست ” کا مطالبہ کرنا شروع کردیا. مظاہرین نے آزاد شمالی ترکستان کے پرچم اٹھائے تھے اور افغان قوم اور اشرف غنی کے خلاف نعرے بازی کی.

یاد رہے کہ اس تحریک کے علاوہ بھی دو مضبوط تحریکیں “اسلامی جمہوریہ خراسان و اسلامی جمہوریہ ھزارستان ” افغانستان سے آزادی مانگ رہے ہیں.
ٹوٹے گا افغانستان بنیں گے اسلامی جمہوریہ خراسان، اسلامی جمہوریہ ھزارستان و اسلامی جمہوریہ شمالی ترکستان نیچے تصویر دیکھ سکتے ہیں
اور اس کے علاوہ بھی طالبان مجاہدین آئے روز امریکی اور افغانی آرمی کے پرخچے اڑا رہے ہیں

انڈیا کو پراکسی وار کا جواب
تو انڈیا تم کیسے بھول گئے دنیا کے تیز ترین دماغوں والی فوج خاموش رہتی تمہاری پراکسی وار پہ ہماری تیز ترین دماغوں والی آرمی نے بھی حلف برداری پر آئے نوجوت سنگھ سدھو کو کرتار پور بارڈر کھولنے کی خوشخبری سنا دی




ایک جپھی اور ایک خوشخبری نے 3 مہینے تک آگ لگا دی پورے ہندوستان میں ہندؤ میڈیا پہ اسی آگ کو اج مزید بھڑکا دیا افتتاح کر کے ہندوؤں اب جلس رہے ہیں ان کے ٹوئیٹ اور ویڈیو دیکھے

اب انڈیا نہ ہاں کرتا ہے نہ ہی ناں کرتا ہے ہاں کرتا ہے تو اپنی عوام میں بدنام ہوتا ہے نا کرتا ہے تو 12 کروڑ سیکھ باغی ہوتے ہیں

اب پاکستان چاہے تو سیکھ باغی ہو سکتے ہیں اگر یہاں تعاون نہ کیا تو کیونکہ پہلے پنجاب میں خالصتان تحریک چل رہی ہے کرتار پور بارڈر کے افتتاح کے ساتھ ہی مودی کی الیکشن کو بھی برباد کر دیا ہے اب اس کے پاس مخالفت کا بیانیہ بھی نہیں رہا ایک بار پھر سیکھوں کو اپنی طرف کھینچ لیا ہے
اور خالصتان کی بنیاد پر پہلا قدم ہے انڈیا نہ سدھرا تو یہ تکمیل ہو جائے گا

(تحریر: جان زادہ)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں