304

صحافی ہونے کے ناتے لوگوں نے مجھے بتایا میں گیا تو بچہ دیکھا اور

دوستو!
یہ بچہ ہمارے شہر کے قریب ملا، راستے سے ایک لیاقت چانڈیو نامی رکشہ ڈرائیور گزر رہا تھا کہ گنے کے فصل میں بچہ دیکھا ، تو۔۔۔

صحافی ہونے کے ناتے لوگوں نے مجھے بتایا میں گیا تو بچہ دیکھا اور لے کر گھر آیا، اسے اس وقت دودھ کی شدید ضروت تھی جوکہ۔۔۔

چھوٹا بچہ




بندوبست کیا پھر اس کی میڈیکل ٹریٹمنٹ کروائی اور پھر میں نے یہ فیصلا کیا کہ میں اس بچے کو پالوں گا. میں اسے نام دونگا میں اسے شناخت دونگا. اور اسے۔۔۔

اسے بیٹا بناؤنگا والدین دونگا میں اس کی تعلیم و تربیت کا زمہ لیتا ہوں. بہت سارے بے اولاد دوستوں نے مجھے کالز اور ایس ایم ایس کیے ہیں ان سب کا شکریہ کہ ان کے دل میں انسانیت کیلیے عزت ہے.




اس پوسٹ کا مقصد سب دوستوں کو انفام کرنا تھا کیونکہ مجھے بہت کالز اور ایس ایم ایس موصول ہو رہے تھے…. اور بلخصوص

ان لوگوں کو بتانا جو اسے پھینک کر گئے تھے…
آپ کے جائز محبت کی جائز نشانی جسے آپ ناجائز سمجھ کر پھینک گئے ہیں.

میں اسے اس معاشرے میں شناخت دلوانے کا عہد کرتا ہوں.
ڈاکٹر کی رپورٹ کے مطابق بچہ بلکل صحت مند ہے۔
بس اب اللہ اسے زندگی دے.




بشکریہ اردو صفحہ فیس بک پیج
لطیف ابراہیم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں