آل صوبائی خیبرپختونخوا گڈز ٹرانسپورٹ کا اجلاس

بونیر۔شوکت علی بونیری سے
آل صوبائی خیبرپختونخوا گڈز ٹرانسپورٹ کا اجلاس،فیصل آبادمیں کسٹم حکام کی جانب سے ٹرک ڈرائیوروں سے رویہ پر سخت تشویش ،چھ لاکھ روپے تک رشوت لینے کا مطالبہ سراسر ناجائز ہے ،رشوت نہ دینے کی پاداش میںقانونی گاڈی پکڑ کر دو دوسال تک عدالتوں کے چکرلگانے پر مجبورکرتے ہیں ،سلسلہ بندنہیں کیاگیاتوملک بھرکی سطح پر پہیہ جام ہڑتال کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ خیبرپختونخوا،آل صوبائی گڈز ٹرانسپورٹ کا اجلاس زیر صدارت چیئرمین لیاقت خان منعقدہوا جسمیں گڈز ٹرانسپورٹ کے صوبائی رہنماو¿ں سکندرخان ،انجینئرجمیل ،نصیب گل بونیری اور دیگرنے کثیر تعدادمیں شرکت کی ،اجلاس میں کہاگیاکہ ہم ملک بھرمیں قانونی گڈز ٹرانسپورٹ خدمات سرانجام دے رہے ہیں لیکن گزشتہ چند سالوں سے فیصل آبادکے کسٹم حکام انسپکٹر منصورسلیم ،نصراللہ اور دیگرنے گڈذ ٹرانسپورٹ برادری کے ساتھ غیر ذمہ دارانہ رویہ اپنایاہواہے ،سنگاپور ٹرک جوکہ سپرینکل اورمکسچرز کی قانونی راستہ سے پاس ہوجاتے ہیں لیکن یہی ٹرک فیصل آبادمیں کسٹم حکام بلاجواز تنگ کرکے چالان کرتے ہیں اور رشوت کے طورپر چھ لاکھ روپے فی ٹرک دینے کامطالبہ کرتے ہیں۔




انہوں نے کہاکہ جوگاڈی ناجائز رشوت نہیں دیتا اور ان انسپکٹروں کی جیب گرم نہیں کرتاتو انہیں چالان کرکے ٹرانسپورٹ برادری کو مشکلات میں پھنساکر دوسالوں تک عدالتوں کا چکر لگانے پر مجبورکرادیتے ہیںاس حوالے سے ہائی کوٹ اور دیگر اعلیٰ عدالتوں نے بھی ہمارے حق میں فیصلے کئے ہیں لیکن پھربھی وکلاءخرچہ دیگراخراجات کے ساتھ تیرہ لاکھ روپے خرچہ اداکرنے پر مجبورہوتے ہیں جوکہ ٹرک مالکان کی بس کی بات نہیں ہے انہوں نے حکومت اور دیگراعلیٰ حکام سے مطالبہ کیاہے کہ ان کسٹم حکام کی رویہ ٹھیک درست کرکے ان کے خلاف تحقیقات کی جائے اور اگر ہمارے ساتھ ظلم کا یہ سلسلہ بندنہیں کیاگیاتوہم ملک بھرکے سطح پر پہیہ جام ہڑتال کرنے پر مجبورکریں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں