طلباءاحتجاج پر پولیس کی جانب سے وحشیانہ کارروائی

بونیر شوکت بونیری
پشاور یونیورسٹی کے پرامن طلباءاحتجاج پر پولیس کی جانب سے وحشیانہ کارروائی کے خلاف عوامی نیشنل پارٹی سراپا احتجاج بن گئی ،طلباءکی جانب سے اپنے مطالبات کے حق میں پرامن احتجاج پر لاٹھی چارج،تشدد کرنا کونسی انصاف اور تبدیلی ہے ،زخمی طلباءکی فوری علاج معالجہ کی جائے اور بہتر طبعی سہولیات فراہم کی جائے،صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری نثارخان کا احتجاجی اجلاس سے خطاب اور صحافیوں سے گفتگو۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پشاور یونیورسٹی میں طلباءکی جانب سے اپنی حقوق کی حصول اور مسائل کے حل کیلئے نکالے گئے پرامن احتجاج پر پولیس اور یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے متاثرہ طلباءکے حق میں اے این پی سراپا احتجاج بن گئی،اس حوالے سے اے این پی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری نثارخان نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاہے کہ موجودہ انصاف ،تبدیلی اور نئے پاکستان کے دعویدار حکومت کی اصلیت ظاہر ہوگئی ہے جنہوں نے طلباءکی آواز دبانے کی کوشش کرکے پشاور یونیورسٹی کے پرامن ماحول خراب کرنے اور ہاتھوں میں کتاب قلم رکھنے والے طلباءپر آنسوگیس،لاٹھی چارج اور وحشیانہ کارروائی کرکے تعلیم دشمن پالیسی اختیارکررکھی ہے۔

نثارخان نے مطالبہ کیاکہ تمام گرفتارکئے گئے طالب علموں کو رہاکی جائے اور واقعہ میں زخمی طلباءکی فوری علاج معالجہ کی جائے ،انہوں نے کہاکہ اگر طلباءکے ساتھ ایسی بزدلانہ کارروائیوں کا سلسلہ جاری رہاتواے این پی صوبہ بھرمیں اپنے بچوں اور طلباءکے شانہ بہ شانہ ہوکر بھرپوراحتجاج کریں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں