یو لگتا ہے جیسے آج 70 سال بعد پاکستان پہلی مرتبہ پاکستان کو زبان ملی ہے

وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب۔ ناموسِ رسالت صلی اللہ علیہ وسلم، کشمیریوں کے حقوق، ہندوستان کے مظالم، فلسطین، پاکستان میں قائم نئی جمہوری حکومت کے پروگرام، موسمیاتی تبدیلی اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستانی عوام اور افواج کی قربانیوں سمیت دیگر اہم معاملات پر پاکستان کا مؤقف پیش کیا۔

شاہ محمود قریشی کی اردو میں تقریر، کشمیر ایشو، بھارتی دہشتگردی، کلبوشن کا نام لے کر بات کی، بھارت کے طرف سے مزاکرات نہ کرنا، گستاخانہ خاکوں کی طرف توجہ دلانا، خطے میں پاکستان کی اہمیت سے آگاہ کرنا، یو لگتا ہے جیسے آج 70 سال بعد پاکستان پہلی مرتبہ پاکستان کو زبان ملی ہے۔

ناموسِ رسالت صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، پاکستان میں وزیرِ اعظم عمران کی زیرِ قیادت قائم جمہوری حکومت کے وژن اور پاکستان میں بھارتی دہشتگردی، پشاور اور مستونگ حملوں کی پشت پناہی کرنے اور کلبھوشن یادیو سے متعلق ثبوتوں کے حوالے سے وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں تقریر۔

جناب شاہ محمود قریشی آج پوری 22 کروڑ مسلمان آپکا شکریہ ادا کرتی ہے۔ اج ہر پاکستانی کو محسوس ہوا کہ ہم زندہ قوم ہیں۔ ہم ایک آزاد ملک اور ایک ایٹمی ملک ہیں، ہماری فوج دنیا کی بہترین فوج ہے۔
شاہ محمود قریشی سے پیار کرنے والے دوست اس تحریر پو فیس بک پر زیادہ سے زیادہ شیئر کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں