پاکستان میں موجود جعلی چیس فیڈریشن کو ایک بھارتی شخص چلا رہاہے

پاکستان میں موجود جعلی چیس فیڈریشن کو ایک بھارتی شخص چلا رہاہے۔سینیٹر کلثوم پروین
جعلی چیس فیڈریشن کو ایف آئی نے روک کر ایک بڑی سازش کو ناکام بنایا۔ایاز میمن
جعلی فیڈریشن کے نام پر لوگوں کو باہر بھجوانے کا دھندہ کیا جارہاہے ۔ملاقات
کراچی
پاکستان چیس فیڈریشن کی مرکزی صدر سینیٹر کلثوم پروین نے کہاہے کہ پاکستان چیس فیڈریشن میں کوئی دھڑا نہیں ہے بلکہ چیس فیڈریشن ایک ہی ہے جو لوگ جعلی چیس فیڈریشن بناکر بیٹھے ہیں ان کے خلاف کارروائی کرنے کے لیے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے ،جارجیا میں جانے والا تیرہ رکنی دستہ جعلی تھا جسے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے روک دیاہے یہ لوگ چیس کے نام پر اپنے خاندان اور دیگر رشتے داروں کو ملک سے باہر بھجوانے کے ایجنڈے پر کام کرتے ہیں جس کی سرپرستی ایک انڈین شخص کررہاہے ،ان خیالات کااظہار انہوں نے کراچی میں چیس فیڈریشن کے سینئر وائس چیئرمین ایاز میمن موتی والا اور جنرل سیکرٹری سعدیہ قریشی سے ہونے والی ملاقات میں کیا۔ان کا کہنا تھا کہ جعلی چیس فیڈریشن کو ایف آئی نے روک کر پاکستان میں کھیلوں کے خلاف ایک بڑی سازش کو ناکام بنایا ہے جس کے لیے ہم ایف آئی کے شکر گزار ہیں کیونکہ یہ پاکستان میں چیس فیڈیشن کو برباد کرنے کے لیے عالمی ساز ش کے مترادف ہے۔

اس موقع پر موجود ایاز میمن موتی والا نے کہا کہ پاکستان چیس فیڈریشن سینیٹر کلثوم پروین کی سربراہی میں مضبوطی سے کام کررہی ہے ،پاکستان میں موجود جعلی چیس فیڈریشن کو ایک بھارتی شخص بھرت سنگھ چوہان چلا رہاہے جبکہ اس فیڈریشن کو پاکستان میں موجود کسی بھی قومی ادارے کی حمایت حاصل نہیں ہے جو چیس فیڈریشن سینیٹر کلثوم پروین کی سربراہی میں کام کررہی ہے اسے پاکستان اسپورٹس بورڈ سمیت پاکستان کے تمام اداروں کی حمایت حاصل ہے اور اس فیڈریشن کا این اوسی اور نوٹیفیکشن تک ہمارے ہی پاس ہے ، انہوں نے مزید کہاکہ اس سے قبل بھی چیس فیڈریشن کے فروغ میں جعلی فیڈریشن رکاوٹیں کھڑی کرتی رہی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں